|Gilgit Urdu News|myGilgit.com|

اکتوبر 21, 2008

ہائیر ایجوکیشن نے 2کروڑ کی گرانٹ بندکردی ، طلبہ کی فیسوں میں اضافہ ہماری مجبوری ہے ، قراقرم یونیورسٹی

Filed under: Gilgit Urdu News — mygilgit @ 11:22 صبح
Tags: ,

گلگت(کے ٹواخبار)قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی کے مختلف طلباءتنظیموں کے رہنماﺅں نے یونیورسٹی میں حالیہ فیسوں کے اضافے سے متعلق یونیورسٹی کے ڈین پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیم سے ملاقات کی اور طلباءوطالبات کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا ڈین آفس میںہونیوالی اس ملاقات میں بی این ایس او جامعہ قراقرم کے صدر حید عباس پی ایس ایف جامعہ قراقرم کے صدر ذیشان علی ، کے ایس او جامعہ قراقرم کے صدر الطاف حسین ، اسلامی جمعیت طلباءکے ناظم محمد نقیب، آئی ایس او جامعہ قراقرم کے صدر سہیل عباس اور بگروٹ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے صدر امتیاز علی بگو رو شامل تھے تمام طلبہ تنظیموں کے عہدیداروں نے یونیورسٹی کے ڈین کو فیسوں میں اضافہ سے پیدا ہونیوالی صدرتحال سے آگاہ کیا جس پر ڈاکٹر پروفیسر محمد سلیم نے کہا کہ قراقرم یونیورسٹی کو ملنے والا سالانہ 2 کروڑ کی گرانٹ ہائر ایجوکیشن کمیشن نے بند کر دیا ہے اور ہائر ایجوکیشن نے ہدایت کی ہے کہ یونیورسٹی اپنے اخراجات خود پورے کرے انہوں نے کہا کہ گرانٹ بند ہونے کی وجہ سے یونیورسٹی انتظامیہ نے مجبوراً فیسوں میں اضافہ کیا ہے اگر فیسوں میں اضافہ نہ کیا جاتا تو یونیورسٹی کو ختم کر کے محض پوسٹ گریجویٹ کالج بنانا ہوتا یا پھر کئی شعبے یونیورسٹی سے ختم کرنے پڑتے اس حوالے سے وائس چانسلر اسلام آباد سے واپس آ کر خود طلبہ وطالبات کو فیسوں سے متعلق کوئی یقین دہانی کرا سکتے ہیں انہوں نے قانون ساز اسمبلی کے اراکین سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ یونیورسٹی کو گرانٹ دلانے کیلئے اقدامات کرے

Leave a Comment »

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں.

RSS feed for comments on this post. TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Create a free website or blog at WordPress.com.

%d bloggers like this: