|Gilgit Urdu News|myGilgit.com|

اکتوبر 25, 2008

ڈگری کالج جوٹیال میں تعلیمی سہولتوں کافقدان، پڑھائی متاثر

گلگت(کے ٹواخبار) حکومت کی عدم توجہی اور محکمہ تعلیم شمالی علاقہ جات کی بے حسی بوائز ڈگری کالج جوٹیال تمام سہولتوں سے محروم ہیں ابھی تک کالج کی عمارت کو اپ گریڈ نہیں کیا جا سکا ہے کلاس روم میں گنجائش سے زیادہ طلبہ کو رکھا جاتا ہے اساتذہ کی کمی تفصیلات کے مطابق جہاں پورے شمالی علاقہ جات میں تعلیمی سہولتوں کا فقدان ایک طرف وہاں شمالی علاقہ جات کا ہیڈکوارٹر گلگت میں طلبہ کیلئے صرف ایک ہی ڈگری کالج موجود ہے وہ بھی ابھی تک بلڈنگ سے محروم ہے گزشتہ کئی سالوں سے کالج کو اساتذہ کی کمی کا سامنا ہے ارباب حل وعقد کو اس بارے میں مکمل تفصیلات ہونے کے باوجود ابھی تک حالت زار کوبہتر بنانے کیلئے کوئی کارروائی نہیں کی گئی گلگت شہر میں خطرناک حد تک آبادی میں اضافہ ہو رہا ہے دوسرے اضلاع کے باشندے بھی گلگت شہر میں مقیم ہیں ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ شمالی علاقہ جات کے ہیڈ کوارٹر کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے دو مزید بوائز ڈگری کالج کا قیام عمل میں لایا جاتا مگر بدقسمتی سے حکومت کی عدم دلچسپی اور محکمہ تعلیم شمالی علاقہ جات کی بے حسی کی وجہ سے بوائز ڈگری کالج کے قیام کی بجائے پہلے سے موجود ایک بوائز ڈگری کالج جوٹیال میں ناکافی عمارت اور طلبہ کی تعداد زیادہ ہونے کی وجہ سے کلاسوں میں گنجائش سے زیادہ طلبہ ہونے کی وجہ سے طلبہ کی پڑھائی بری طرح متاثر ہو رہی ہے اساتذہ کی کمی کی وجہ سے سال میں کورس بھی مکمل نہیں پڑھائے جا سکتے بوائز ڈگری کالج جوٹیال کے طلبہ اور والدین کا حکومت سے مطالبہ ہے کہ کالج کی عمارت کو اپ گریڈ کرنے کے علاوہ اساتذہ کی کمی کو پورا کر کے طلبہ کے مستقبل کو ضائع ہونے سے بچایا جائے

Leave a Comment »

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں.

RSS feed for comments on this post. TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

WordPress.com پر بلاگ.

%d bloggers like this: