|Gilgit Urdu News|myGilgit.com|

فروری 8, 2009

امن کےلئے گھرگھرجاکر جھولی پھیلاﺅں گا، قاضی نثا

Filed under: Gilgit News,Gilgit Urdu News — mygilgit @ 10:57 صبح

گلگت(کے ٹو ) تنظیم اہلسنت والجماعت کے امیر وخطیب مرکزی جامعہ مسجد گلگت مولانا قاضی نثاراحمد نے کہاہے کہ یہاں کے عوام نے امن کےلئے ہر وقت حکومت کے ساتھ تعاون کیاہے اورہرمشکل مرحلے کوامن کی خاطر صبروتحمل کےلئے برداشت کیاہے اب حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ بھی امن پسندوں کے ساتھ تعاون کرتے ہوئے دہشت گردوں کے نیٹ ورک کوختم کرے اورگزشتہ ماہ دہشت گردی کانشانہ بننے والے ڈائریکٹرمحکمہ زراعت عبدالواحد سمیت5شہداءکے قاتلوںکے ماسٹرمائنڈ کوگرفتارکرکے قرارواقعی سزادے میںیقین دلاتاہوںکہ امن کےلئے گھرگھرجاکر جھولی پھیلاﺅںگاان خیالات کااظہارانہوںنے جامعہ مسجد بسین شوٹی میںایک بہت بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیاانہوںنے کہاکہ یہ علاقہ ہم سب کاہے اوریہاںکاامن ہمیںہرلحاظ سے عزیز ہے مگرکسی کے صبرکاغلط فائدہ نہیںاٹھاناچاہیے اس وقت ملک دشمن اورعلاقہ دشمن طاقتیں یہاںکے امن کو خراب کرنے پرتلی ہوئی ہیںاورامن دشمن عناصر بیرون ملک دشمن عناصر کی طرف سے بھیجی گئی رقوم کوہضم کرنے کےلئے امن کے ساتھ کھیل رہے ہیںرااورموساد کے ایجنٹ سب سے زیادہ سرگرم عمل ہیںاورحکومرت کوسب کچھ معلوم ہونے کے باوجود ان پر ہاتھ نہیںڈالاجارہاہے جس کاپوری قوم کوافسوس ہے علاقہ بھرکے 98فیصدعوام امن پسند ہیں لہٰذاامن پسندوںکے ساتھ مزید مذاق بند کیاجائے مولاناقاضی نثاراحمد نے اپنے خطاب میں عوام سے اپیل کی کہ وہ صبروتحمل کامظاہرہ کرتے ہوئے آپس میںاتحاد واتفاق قائم کرےں بے گناہ اورمعصوم لوگوں کاقتل حرام ہے اوربے گناہ افراد کے قاتل اللہ کے عذاب سے نہیںبچ سکیںگے

Leave a Comment »

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں.

RSS feed for comments on this post. TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

WordPress.com پر بلاگ.

%d bloggers like this: